17 نومبر 2010 نومبر شہید عصمت سرپرہ

Image

مصنف:ڈاکٹر صولت ناگ

مجھے فضا کا کوئی ڈر نہیں

گر آرزو تو یہ فقط

جب زندگی ساتھ چھوڑ دے

حیات ہیئت بدل چکے

میری شکل کوئی اور ہو

کسی سفر کا نیا دور ہو

بس یہی ہے میری اک ندا

آزاد رہنے کی لگن

انقلاب کا یہ بانکپ

کسی اور کی بنے صدا

یہی زیست کی ہے بقاء

کچھ اور دست دراز ہوں

جو پرچمِ انقلاب کو

چٹان بن کے تھام لیں

پھر جزبہ انقلاب سے

کچھ اور دل گدازہوں

جو مقتلوں تک جاسکیں

میرامدعا بڑھا سکیں

صحنِ آرزو میں جو

گلِ امید کھلاسکیں

جہد کے نت نئے چراغ

ہر سمت وہ جلا سکیں

اور میرے جسد کے چارسو

نہ ہو کوئی نوحہ کناں

نہ گریہِ ماتم جاں

بس اک نغمہِ آزاد ہو

جو انقلاب کا ساز ہو

سامراج کےخلاف اک مستقل آواز ہو

نہ جس میں کوئی یاس ہو

نہ ظلمتوں کا داغ ہو

صبح کی ایک آس ہو

بس فتح کا احساس ہو۔

One comment on “17 نومبر 2010 نومبر شہید عصمت سرپرہ

  1. Pingback: 17 نومبر 2010 نومبر شہید عصمت سرپرہ | brckarachi

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s